مدرسہ پر حملہ قابل مذمت: نوجوانوں کو صبر کی تلقین


تحریک انصاف کے کارکنان کی جانب سے مسجد اور مدرسہ کی بے حرمتی کرنا سنت رسول کی بے توقیری اور قابل مذمت عمل ہے، وفاق المدارس کے صوبائی ناظم مولانا حسین احمدکا تیمرگرہ کے متاثرہ مسجد ومدرسہ کادورے موقع پر اظہار خیال۔

انہوں نے کہا کہ مدارس کا اصلاح معاشرہ میں اہم کردار ہے معاشرہ میں دین بیداری مدارس ومساجد کی مرہون منت ہے جبکہ ایک مخصوص پارٹی کی طرف سے مسجد مدرسہ کی بے حرمتی قابل افسوس ہے۔

مولانا حسین احمد نے اس موقع پر حیرت کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ موجودہ سیاسی ماحول میں یہ ایک انوکھا اقدام معاشرہ میں تقسیم کا باعث بن سکتا ہے جو ایک خطرناک عمل ہے۔ ہر پارٹی کے کارکن سب سے پہلے اپنے آپ کو مسلمان سمجھتے ہیں اور اس پر فخر کرتے ہیں اس کے بعد وہ ایک سیاسی پارٹی سے تعلق رکھتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ مسجد و مدرسہ کی حرمت کا خیال سب کو رکھنا چاہیے۔ مدرسہ کے حدود کو پھلانگنا طلبہ اور علماء کو زدوکوب کرنے کےساتھ ساتھ سنت رسول کی بےتوقیری قابل افسوس ہے، اور نوجوانوں کو صبرکی تلقین کرتا ہوں کہ اکابر کی سرپرستی میں اس مسئلہ کو حل کرنا چاہیے۔

مولانا حسین احمد نے کہا کہ وہ انتظامیہ سے بلا تفریق ذمہ دار افراد کے خلاف کاروائی کا مطالبہ کرتےہیں۔

ویب ڈیسک

Written by